admitad Ap ya koi aur cancer ka patient hai toh . .


Sehri Special Recipes



Iftaar Special Recipes



Need Your Feed Back


  • You have 1 new Private Message Attention Guest, if you are not a member of Urdu Tehzeb, you have 1 new private message waiting, to view it you must fill out this form.
    .

    User Tag List

    + Reply to Thread
    + Post New Thread
    Results 1 to 3 of 3

    Thread: Ap ya koi aur cancer ka patient hai toh

    1. #1
      The thing women have yet to learn is nobody gives you power. You just take it. Admin CaLmInG MeLoDy's Avatar
      Join Date
      Apr 2014
      Posts
      6,194
      Threads
      2231
      Thanks
      924
      Thanked 1,357 Times in 860 Posts
      Mentioned
      1038 Post(s)
      Tagged
      7965 Thread(s)
      Rep Power
      10

      Ap ya koi aur cancer ka patient hai toh

      This is Authentic message.

      *تقریباً 5 ماہ پہلے میرا چچا کے پیٹ میں ایک معمولی زخم کی وجہ سے ڈاکٹر کو کچھ شک ہوا اور ٹسٹ تجویز کیا ........ ٹسٹ کا نتیجہ آیا تو گھر میں سب کے اوسان خطا ہو گئے۔ جی ہاں چچا جان کو کینسر جیسا موذی مرض لاحق ہو گیا تھا وہ بھی تیسرے درجے کا۔*
      *بہر حال علاج کیلئے شوکت خانم پشاور گئے ٹسٹ کا رزلٹ دیکھ کر وہاں کے ڈاکٹروں نے علاج سے معذرت کر لی ۔ وجہ یہ بتائی گئی کہ ہماری پالیسی ہے کہ کینسر کے اس سٹیج میں ہم 40 سال سے کم عمر والے مریض کو داخلہ دیتے ہیں وگرنہ نہیں۔ ہم بھی کچھ کہے بنا پریشان ہو کر وہاں سے نکل آئے کیونکہ چچا جان کی عمر ساٹھ کی دہائی کراس کر چکی تھی اور خیر سے لائف ٹائم شناختی کارڈ بھی بن چکا تھا۔ خیر گھر پر تو نہیں بیٹھ سکتے تھے کچھ نہ کچھ تو کرنا ہی تھا۔پشاور میں کینسر کے سرکاری ہسپتال ارنم سے علاج شروع ہوا۔ اس دن یہ عقدہ بھی کھلا کہ گورنمنٹ واقعی ماں کے مانند ہوتی ہے بچہ کتنا ہی بگڑ جائے ماں قبول ہی کرتی ہے یہاں مریض اور مرض کتنا ہی بگڑ جائے نہ نہیں ہوتی ۔ سو ہمیں بھی داخلہ مل گیا مگر مرض بڑھتا گیا جوں جوں دوا کی۔ اب سنیں کام کی بات جب علاج کا کچھ اثر نہ ہوا تو کچھ مہربان دوستوں نے دور پہاڑوں میں مقیم ایک حکیم کا بتایا جو کینسر کے مرض میں بے حد مشھور ہے پر جگہ تھی کافی دور۔ مہینہ رمضان کا تھا ایک دن سحری کے فورا بعد اللہ کا نام لیکر بذریعہ موٹر سائیکل ہم مردان سے چل کر شانگلہ مارتونگ میں واقع حکیم صاحب کے مطب میں پہنچ گئے ۔ وہاں یہ دیکھ کر حیران رہ گئے کہ بہت دور دور سے لوگ وہاں آئے ہوئے تھے اور اکثر نے تو علاج کیلئے رات بھی یہاں گذاری تھی کیونکہ مریضوں کے لئے دو اچھے سے ہوٹل بھی اہل علاقہ نے بنائے ہیں جن میں انتہائی مناسب ریٹ پر مریضوں کو کمرے دستیاب ہیں بہر حال ہم اپنی باری پر حکیم صاحب کے پاس گئے اور انکو مریض کے بارے میں بتایا انہوں نے ایک چھوٹی سی پڑیا ہمیں پکڑائی اور کہا یہ سات دن کی دوائی ہے پرہیز کے ساتھ مریض کو دوائی دینی ہے اور سات دن کے بعد اگر آپ نے یا مریض نے کچھ بہتری محسوس کی تو دوبارہ آکر مزید چالیس دن کی دوا لیتے جائیے بصورت دیگر دوبارہ آنے کی ضرورت نہیں ہم نے دریافت کیا کہ بہتری سے مطلب؟ فرمانے لگے یا تو ٹسٹ سے فرق آیا ہو گا اور یا مریض کی تکلیف وغیرہ میں کمی آئی ہو گی۔ ٹھیک ہے جی کہہ کر ہم نے جیب کی طرف ہاتھ بڑھایا تو انہوں نے منع کیا اور فرمایا ہمارا اصول ہے پہلی بار پیسے نہیں لیتے اگر آپ کے مریض کو فائدہ ہو تو آکر پوری دوائی قیمت کے ساتھ لے جاو نہیں تو یہ ہماری طرف سے ہدیہ۔۔ قصہ مختصر رات وہاں مقامی ہوٹل میں گذار کر صبح ہم واپس آئے اور چچا جان کو دوا شروع کرائی چوتھے دن ہی ہم سب نے واضح فرق محسوس کیا جسکا مطلب تھا کہ اب ہمیں پھر حکیم صاحب کے پاس پہنچنا پڑے گا ۔بہر حال ایک بار پھر ہم مارتونگ پہنچ گئے (یہ ہے تو شانگلہ میں لیکن آپ اگر مردان والی سائیڈ سے آرہے ہیں تو پھر بونیر کا راستہ آسان رہے گا ) ہم چالیس دنوں کی دوا لیکر صرف چار ہزار فیس حکیم صاحب کو ادا کر چلے آئے اب صورتحال یہ ہوئی کہ چچا جان کو ڈاکٹر نے دوبارہ ٹسٹ کرایا اور نتیجہ بالکل ve - ، جی ہاں کینسر کا نام و نشان نہیں۔ زندگی موت اللہ کے ہاتھ میں ہے موت کا وقت اٹل ہے آگے پیچھے نہیں ہو سکتا لیکن میری آپ سے درخواست ہے کہ اگر آپ کے جاننے والوں میں سے خدا ناخواستہ کوئ اس موذی مرض میں مبتلا ہو تو اسے ضرور اس حکیم کا مشورہ دیدیں۔ کیا پتہ آپ کی وجہ سے کسی کے چند دن آرام سے گذر جائیں*۔ جانباز خان ---------------------------------------
      03463722885
      *اوپر دیانمبر حکیم صاحب کے بھائی کے پاس ہوتا ہے۔ ایڈریس تو انتہائی آسان ہے ضلع شانگلہ میں مارتونگ کا علاقہ ہے بس آپ کسی سے بھی پوچھ لیں کہ مارتونگ والے حکیم کا پاس جانا ہے آپ پہنچ جائیں گے حکیم انتہائ مشہور ہے۔ دو راستے جاتے ہیں مارتونگ کی طرف ایک سوات کی طرف سے اور دوسرا مردان کی طرف سے آسان راستہ مردان والا ہے۔ آپ مردان سے بونیر براستہ رستم چلے جائیں اور بونیر پہنچ کر کسی سے بھی مارتونگ کے راستے کا پوچھ لیں* ۔
      مردان سے پانچ یا ساڑھے پانچ گھنٹے لگ جاتے ہیں اور ہاں مریض کو ساتھ لیجآنے کی ضرورت نہیں۔







    2. The Following 2 Users Say Thank You to CaLmInG MeLoDy For This Useful Post:

      intelligent086 (06-23-2018), Khala Sardarni (07-15-2018)

    3. #2
      Administrator Admin intelligent086's Avatar
      Join Date
      May 2014
      Location
      لاہور،پاکستان
      Posts
      38,382
      Threads
      12088
      Thanks
      8,627
      Thanked 6,933 Times in 6,469 Posts
      Mentioned
      4324 Post(s)
      Tagged
      3289 Thread(s)
      Rep Power
      10

      Re: Ap ya koi aur cancer ka patient hai toh

      اللہ رب العزت بزرگوں کو دائمی صحت سے ہمکنار رکھے۔
      آمین یا رب العالمین
      جزاک اللہ خیراً کثیرا



      کہتے ہیں فرشتے کہ دل آویز ہے مومن
      حوروں کو شکایت ہے کم آمیز ہے مومن

    4. #3
      New Member Khala Sardarni's Avatar
      Join Date
      Feb 2018
      Posts
      34
      Threads
      5
      Thanks
      15
      Thanked 26 Times in 20 Posts
      Mentioned
      1 Post(s)
      Tagged
      0 Thread(s)
      Rep Power
      0

      Re: Ap ya koi aur cancer ka patient hai toh

      Thank you


    + Reply to Thread
    + Post New Thread

    Thread Information

    Users Browsing this Thread

    There are currently 1 users browsing this thread. (0 members and 1 guests)

    Visitors found this page by searching for:

    Nobody landed on this page from a search engine, yet!
    SEO Blog

    Posting Permissions

    • You may not post new threads
    • You may not post replies
    • You may not post attachments
    • You may not edit your posts
    •