• You have 1 new Private Message Attention Guest, if you are not a member of Urdu Tehzeb, you have 1 new private message waiting, to view it you must fill out this form.
    . .
    Viki

    User Tag List

    + Reply to Thread
    + Post New Thread
    Results 1 to 3 of 3

    Thread: پاکستان میں سٹیج ڈرامے کا ارتقاء

    1. #1
      Administrator www.urdutehzeb.com/public_html intelligent086's Avatar
      Join Date
      May 2014
      Location
      لاہور،پاکستان
      Posts
      37,483
      Threads
      11967
      Thanks
      7,384
      Thanked 6,366 Times in 6,018 Posts
      Mentioned
      3965 Post(s)
      Tagged
      3286 Thread(s)
      Rep Power
      10

      پاکستان میں سٹیج ڈرامے کا ارتقاء

      پاکستان میں سٹیج ڈرامے کا ارتقاء


      منیر راج
      لاہور کے تھیٹر میں شخصی اداکاری اس وقت عام ہوئی جب 1979-80ء میں اداکار امان اللہ کا دور آیا اور وہ آتے ہی مروجہ تھیٹر پر چھا گیا۔ امان اللہ میں اداکاری کم اور صدا کاری زیادہ تھی جگت کو امان اللہ نے اتنا عام کیا کہ ہر کامیڈی اداکار کے لیے کردار میں جگت کرنا ضروری سمجھا جانے لگا۔ جو اب تک رائج ہے۔ امان اللہ کی شخصی عادت میں بندر بننا اور گائوں اور شہر کے کلچر کو اپنے انداز میں بیان کرنا شامل تھا۔ جو اس نے اپنے طویل دور میں جاری رکھا۔ 1950ء سے 1960ء اور 1970ء تک اداکار ہدایتکار اور مصنف کمال احمد رضوی کا انداز بھی اپنا تھا۔ ڈرامے میں جب بھی کھج کے بات کرتے تو لوگ ان کے انداز کو پسند کرتے تھے۔ اسی طرح جمیل فخری کا آنکھوں آنکھوں میں مزاح پیدا کرنا فخری احمد کا پہلوانی انداز خالد عباس ڈار کا مکالمے کرتے کرتے ایک دم لمبی تان لگانا یہ وہ عادات ہوتی ہیں جنہیں اداکار ہمیشہ اپنے ساتھ ساتھ رکھتا ہے۔ یہ طرز وہ ہے جسے Bashky اپنی مشہور کتاب The Path of the Russian Stage میں مظہری طرز سے تعبیر کرتا ہے۔ اس طرز کا ایکٹر اپنے آپ کو یہ فریب نہیں دیتا کہ وہ واقعی چین کا خاقان ہے روم کا سیزر ہے یا جارج پنجم ہے۔ وہ خوب جانتا ہے کہ وہ ایکٹر ہے اور اس کے سامنے ایسے لوگ بیٹھے ہوئے ہیں جنہیں اس نے اپنے فن سے محظوظ و متاثر کرنا ہے پرانے یونانی اداکار ایسے ہی تھے کہ جب وہ ٹریجیڈی مکالمے بولتے تو زیادہ تر چہرہ، دیکھنے والوں کی طرف رکھتے تھے تاکہ وہ دیکھنے والوں کو اپنی اداکاری سے متاثر کر سکیں اور کردار کے جذبات کا بھرپور انداز میں اظہار کر سکیں۔ باڈی ورک Body Work ہر اداکار اپنے اپنے انداز میں باڈی کا استعمال کرتا ہے یہ مثالیں زیادہ تر انڈین اور پاکستانی کامیڈی اداکاری میں بہتات سے پائی جاتی ہیں۔ ہمارے ہاں پاکستانی فلموں میں اداکار آصف جاہ دلجیت مرزا اور نذر جبکہ پاکستانی تھیٹر میں کمال احمد رضوی بعد میں فخری احمد عرفان ہاشمی ہندوستانی فلم میں مکری ہالی وڈ میں جیری لوئیس جو اپنی باڈی موومنٹ سے لوگوں کو ہنساتے تھے۔ لاہور تھیٹر میں اکبر کوریا ایک ایسا اداکار تھا جو مکمل طور پر مکالمے کو اپنی باڈی میں سمو کر اداکاری کرتا تھا۔ اگرچہ ایسا کرنے کی ہر کامیڈی اداکار کوشش کرتا ہے مگر کردار میں گم ہو کر باڈی کو استعمال کرنا کسی کسی کا کام ہے جیسے فلم میں اداکار رنگیلا اور منور ظریف تھیٹر میں سہیل احمد جواد وسیم افتخار ٹھاکر اور نواز انجم۔ واقعہ سنا کر ہنسانے والوں میں خالد عباس ڈار معین اختر عمر شریف جنہوں نے اس ملک میں ہی نہیں بلکہ ساری دنیا میں اپنی طرز اداکاری و کامیڈی کا لوہا منوایا۔ ایکسپریشن کی اداکاری یہ دنیا کا بہترین آرٹ ہے۔ فقرے کو محسوس کرتے اور سمجھتے ہوئے اداکاری کرنے والے اداکار گنے چنے ہیں۔ جیسے ہالی وڈ میں چارٹن ہسٹن چارلی چپلن اور مارلن برانڈو۔ جبکہ انڈیا میں دلیپ کمار کملا احسن اوم پوری گیتا بالی مدھو بالا نرگس مینا کماری اور سمیتا پاٹل شامل ہیں جبکہ پاکستان میں علائو الدین صبیحہ خانم شمیم آرا اور تھیٹر میں شبانہ شیخ شبانہ بھٹی فردوس جمال وسیم عباس خالد بٹ ثمینہ احمد اور ثمینہ پیرزادہ شامل تھے۔ ٭٭٭





      کہتے ہیں فرشتے کہ دل آویز ہے مومن
      حوروں کو شکایت ہے کم آمیز ہے مومن

    2. #2
      Moderator www.urdutehzeb.com/public_htmlwww.urdutehzeb.com/public_html
      BDunc's Avatar
      Join Date
      Apr 2014
      Posts
      7,500
      Threads
      668
      Thanks
      132
      Thanked 69 Times in 63 Posts
      Mentioned
      381 Post(s)
      Tagged
      6316 Thread(s)
      Rep Power
      112

      Re: پاکستان میں سٹیج ڈرامے کا ارتقاء

      Ahaan


    3. #3
      Administrator www.urdutehzeb.com/public_html intelligent086's Avatar
      Join Date
      May 2014
      Location
      لاہور،پاکستان
      Posts
      37,483
      Threads
      11967
      Thanks
      7,384
      Thanked 6,366 Times in 6,018 Posts
      Mentioned
      3965 Post(s)
      Tagged
      3286 Thread(s)
      Rep Power
      10

      Re: پاکستان میں سٹیج ڈرامے کا ارتقاء

      Thanks


      کہتے ہیں فرشتے کہ دل آویز ہے مومن
      حوروں کو شکایت ہے کم آمیز ہے مومن

    + Reply to Thread
    + Post New Thread

    Thread Information

    Users Browsing this Thread

    There are currently 1 users browsing this thread. (0 members and 1 guests)

    Visitors found this page by searching for:

    Nobody landed on this page from a search engine, yet!
    SEO Blog

    Tags for this Thread

    Posting Permissions

    • You may not post new threads
    • You may post replies
    • You may not post attachments
    • You may not edit your posts
    •