دھوم اتنی ترے دیوانے مچا سکتے ہیں کہ ابھی عرش کو چاہیں تو ہلاسکتے ہیں

مجھ سے اغیار کوئی آنکھ ملاسکتے ہیں؟
منہ تو دیکھو وہ مرے سامنے آ سکتے ہیں؟

یاں وہ آتش نفساں ہیں کہ بھریں آہ تو...